1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

تمام مقلدین کو کھلا چیلنج ہے (کہ کسی صحابی سے تقلید کا حکم اور اس کا واجب ہونا ثابت کر دیں)

'تقلید واجتہاد' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏اگست 27، 2013۔

  1. ‏نومبر 28، 2016 #131
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    جب آپ کے نزدیک امام اعمش کا عنعنہ قبول نہیں تو علامہ ہیثمی کی تصحیح پر آپ نے روایت کو کیسے صحیح کہ دیا
    بہر حال امام اعمش کی تصریح کے حوالہ کا انتظار رہے گا
     
  2. ‏نومبر 28، 2016 #132
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,562
    موصول شکریہ جات:
    412
    تمغے کے پوائنٹ:
    197

    ارے جناب جوش سے نہیں ہوش سے کام لیں صرف رائے پوچھی ہے اتنی لمبی تقریر کر ڈالی؟

    اور ہمارا موقف تو آپنے بتا ہی دیا ۔ ۔ ۔ ۔ ابتسامہ

    اپنا بھی بتادو
     
  3. ‏نومبر 28، 2016 #133
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    آپ کا موقف میں نے یہ بتایا ہے کہ آپ ایک روایت جو آپ کے ہاں ضعیف ہے سےاستدلال کر رہے ہیں. کیا آپ اسی طرح کرتے ہیں. ؟
    آپ کا طرز کلام غیر علمی ہے نہ روایت کی سندی پہلو پر گفتگو کی اور نہ متن پر. اگر یہی طرز کلام رکھنا ہے معذرت. مجھے @اسحاق سلفی صاحب کے جواب کا انتظار ہے ان سے مجھے علمی طرز کلام کی امید ہے
     
  4. ‏نومبر 28، 2016 #134
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,562
    موصول شکریہ جات:
    412
    تمغے کے پوائنٹ:
    197

    سبحان اللہ میں نے جو روایات پیش کی ہیں انکے متن کا تو من مانا ترجمہ کردیا باقی سند پر تو آپ کلام ہی نہیں کرسکے اور نہ کرسکتے ہو سوائے اعمش کے عنعنہ کے اور لاعلمی کا لیبل ٹھوک دیا؟
     
  5. ‏نومبر 28، 2016 #135
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,386
    موصول شکریہ جات:
    715
    تمغے کے پوائنٹ:
    224

    !؟!
     
  6. ‏نومبر 28، 2016 #136
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,562
    موصول شکریہ جات:
    412
    تمغے کے پوائنٹ:
    197

    بھٹی صاحب دماغ سے فارغ ہیں
     
  7. ‏نومبر 28، 2016 #137
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    مجھے آپ عدیل سَلفی کی بجائے عدیل سُلفی لگتے ہیں تبھی تو ۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  8. ‏نومبر 28، 2016 #138
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    عدیل صاحب کی
    عبد اللہ ابن مسعود رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے تقلید کے لئے ایک زبر دست اصول بتایا ہے کہ کسی زندہ کی تقلید (پیروی) مت کرنا کہ وہ محفوظ نہیں۔ تقلید (پیروی) صرف اس کی کرنا جس کی وفات گھمان غالب سے دینِ اسلام پر ہوئی ہو۔
     
  9. ‏نومبر 29، 2016 #139
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    اس روایت میں ہے کہ کسی کی ایسی تقلید مت کرو کہ اگر وہ کفر کرے تو تم بھی اس کی تقلید میں کفر کرو اگر مجبورا کرنی پڑے تو اموات کی پیروی کرو.
    یہ روایت اعمش کے عنعنہ کی وجہ سے ضعیف ہے
     
  10. ‏نومبر 29، 2016 #140
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ نے کہا کہ مردوں کی تقلید نہ کرو اگر کرنی پڑے تو مردہ کی کرو زندہ کی نہیں
    ہم احناف جن مجتہدین کی تقلید کرتے ہیں وہ انتقال کر چکے ہیں
    اس لئے یہ روایت ہمارے موافق اور آپ کی مخالف ہے آپ نے تو ہماری تائید کی ہے
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں