1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

تین طلاق پر ایک حنفی بھائی کی تحریرکا جائزہ

'طلاق' میں موضوعات آغاز کردہ از مقبول احمد سلفی, ‏نومبر 10، 2016۔

Tags:
  1. ‏نومبر 15، 2016 #31
    مقبول احمد سلفی

    مقبول احمد سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    اسلامی سنٹر،طائف، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏نومبر 30، 2013
    پیغامات:
    980
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    158

    میں آپ سے پوچھنا چاہتاہوں کہ رفع یدین کی حدیث ثابت ہے یا نہیں ، یہ حکم مجتہد لگائے گا یا حدیث پر کام کرنے والا ؟ ظاہر سی بات ہے حدیث پر کام کرنے والا لہذا یہاں امام ابوحنیفہ سے غلطی ہوئی کیونکہ ایک مجتہد کی ضرورت اجتہادی امور میں ہے ۔ ساتھ ہی آپ اپنے اس جملہ سے یہ کہنا چاہتے ہیں کہ احناف میں امام ابوحنیفہ ؒ کے علاوہ کوئی مجتہد نہیں گویا حنفی مذہب میں امام صاحب کے علاوہ کسی کی بات قابل قبول نہیں ۔
    لو آگیا نا اونٹ پہاڑ کے نیچے
    یہی تو میرا چیلنج تھا۔
    یعنی
    جبکہ اکثر احناف ان مسائل میں مختلف ہیں۔ تلمیذ نے میرا چیلنج قبول کرتے ہوئے شوال کی مثال دی اور میں نے یہ مذکورہ مسائل دئے کہ ان مسائل کو آپ نہیں تسلیم کریں گے کیونکہ آپ کے مذہب کے خلاف ہے گوکہ آپ کے ہی علماء کا فتوی ہے۔تو میں شوال کی بات کیسے مان لوں تو پھر ان مذکورہ باتوں کا کیا جواب ہوگا ، ان باتوں کے پرکھنے کا معیار کیا ہے ؟
    مگر آپ تو تلمیذ سے بھی آگے نکلے تلمیذ سے میں نے اگلوانے کی کوشش کی کہ بتاؤ شوال کے روزوں کے متعلق امام صاحب سے غلطی ہوئی مگر وہ باتین گول مول کرتے ہوئے خاموش رہے ۔ آپ ہیں کہ کہتے ہیں ۔
    یعنی آپ کے یہاں صرف ایک مجتہد ہے انہیں کی بات مانیں گے وہ ہرمعاملہ میں حق بجانب ہیں ، امام صاحب کا شوال کے روزوں کے متعلق کراہت کا موقف بھی تسلیم کرتے ہیں اور جو دیگر احناف نے شوال کے روزوں کی فضیلت بتائی ہے وہ قبول نہیں کیا جائے گا کیونکہ
     
    Last edited: ‏نومبر 15، 2016
    • زبردست زبردست x 3
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  2. ‏نومبر 15، 2016 #32
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    281
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    کسی حدیث کو پرکھنا محدث کا کام ہے۔ وہ روات کی جانچ پرکھ کرکے حدیث کو اپنے وضع کردہ اصولوں کے مطابق لکھتا ہے۔
    مجتہد فقیہ حدیث میں بیان شدہ مضمون سے مسائل اخذ کرتا ہے۔ کسی حدیث کو دوسروں تک بحفاظت پہنچانا راویوں اور محدثین کا کام ہے اور اس سے مسائل اخذ کرنا فقہاء کا کام ہے۔
    محدث کو فقیہ کے کام میں آڑے نہیں آنا چاہئے اور فقیہ کو محدث کے۔
    ممنوعہ رفع الیدین کی احادیث ثابت ہیں اور منع والی بھی۔ سجدوں میں رفع الیدین کی احادیث ثابت ہیں مگر ممنوع ہونے کے سبب ان پر عمل نہیں کیا جاسکتا۔ اسی طرح صحیح مسلم میں نماز میں کی جانے والی متنازعہ رفع الیدین کی بھی ممانعت ہے لہٰذا نہیں کی جائیں گی۔

    یہ آپ نے میرے کسی فقرہ کو غلط مفہوم دیا ہے۔

    اس قسم کے فقرات ”عالمانہ“ نہیں ”عامیانہ“ کہلاتے ہیں۔
     
  3. ‏نومبر 15، 2016 #33
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    281
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    کوئی غیر مجتہد حنفی فقہ حنفی سے اختلاف کرتا ہے تو کس دلیل سے اس کی بات صحیح اور فقہ حنفی کی ٖغلط ثابت ہوگئی؟ اور کس دلیل سے عامی غیر مجتہد کہ بات مان لے؟

    مجتہد نہ کسی کے بنانے سے بنتا ہے اور نہ ہی دعویٰ سے۔ یہ تو اپنی علمیت اور فہمِ دین دوسروں سے منوالینے کا نام ہے۔ بہت سارے علیم و فہیم گذرے مگر مجتہد اور فقیہ کے طور پر نہ پہچانے گئے ۔
    نئے پیش آمدہ مسائل کے حل کے لئے ہر زمانہ میں علماء رہے اور رہیں گے مگر وہ مجتہد کا درجہ نہ حاصل کرسکے۔
     
  4. ‏نومبر 16، 2016 #34
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    آپ نے کہا تھا
    علماء احناف کے جو اقوال آپ نے ذکر کیے اس سے آپ نے مفہوم نکالا بقول آپ کے موئے سر بھی امام سے اختلاف نہیں کیا جاسکتا. یعنی ہر معاملہ میں امام کی بات ماننی ہے. میں نے آپ سے اتنی بات کہی کہ اگر ان اقوال کا یہی مفہوم ہے تو مجھے ایک حنفی دکھا دیں جس نے ہر شرعی معاملہ میں امام ابو حنیفہ کے قول پر عمل کیا ہو جو آپ تاحال دکھانے سے قاصر ہیں
    جس پر میں نے کہا کہ اگر ہم کو موئے سر بھی امام کے قول سے اختلاف کی اجازت نہیں تو شوال کے روزوں کے معاملے پر ہم نے کیوں قول امام چھوڑا. ظاہر ہے صحیح منصوص حدیث کی وجہ سے. لیکن آپ نے کہا کہ دوسرے مسائل مثلا رفع الیدین قرآت خلف الامام وغیرہ مسائل میں ہم کیوں قول امام نہیں چھوڑ تے تو محترم یہاں ہم نےقول امام پر اس لئے عمل کیا کیوں کہ ہم ان مسائل میں قول امام کو حق پر پایا
    رہا کچھ علماء کا اختلاف تو دیکہیں انہوں جہاں سمجھا حق ہے اس پر عمل کیا لیکن وہ فقہ حنفی کا شاذ قول ہے مفتی بہ قول نہیں
    آپ نے اگلا مطالبہ یہ کیا
    پھر معتبرعلمائے احناف سےیہ اصول لے کر آئیں کہ اگر امام کا کوئی قول قرآن وحدیث کے خلاف ہوتو اسے چھوڑدیں گے
    اس پر میں نے اشرف علی تھانوی رحمہ اللہ کا یہ قول پیش کیا
    اگر کسی اور جزئی میں بھی ہم کو معلوم ہوجائے کہ حدیث صریح منصوص کے خلاف ہے تو اس کو بھی چھوڑ دیں گے اور تقلید کے خلاف نہیں آخر بعض مواقع میں امام صاحب کے اقوال کو بھی چھوڑا گیا ھے
    آگے چل کر مزید کہتے ہیں
    اور خود امام صاحب ہوتے اور اس وقت اس سے دریافت کیا جاتا تو وہ بھی یہی فرماتے تو گویا اس چھوڑنے میں بھی امام صاحب کی اطاعت ہے
    فقہ حنفی کے اصول و ضوابط صفحہ 32
    اس پر آپ کہ رہے ہیں کہ
    آپ صرف یہ بتادیں اشرف علی تھانوی رحمہ اللہ کے قول کا آپ کے نزدیک کیا مطلب ہے . آپ اس قول کا مفہوم بتائیں گے تو آپ کی بات سمجھنا شاید آسان ہو جائے
    جزاک اللہ خیرا
     
  5. ‏نومبر 16، 2016 #35
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,043
    موصول شکریہ جات:
    1,039
    تمغے کے پوائنٹ:
    387

    دخل اندازی کے لۓ معذرت چاہتا ہوں.
    محترم جناب @تلمیذ صاحب سے ایک چھوٹا سا سوال ہے. آپ لوگوں کے علماء کی باتیں آپ ہی سمجھتے ہیں؟ میں نے سب کو یہی کہتے سنا ہے کہ آپ بات کو غلط سمجھ رہے ہیں. میں پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا اہلحدیثوں یا غیر احناف میں عبارت فہمی کی صلاحیت نہیں ہے؟؟؟
    کوئی بھی قول ہو. چاہے وہ ان الہدایہ کالقرآن.... والا قول ہو، چاہے حدیث مصراۃ والا قول ہو. اس طرح کے جتنے بھی اقوال ہیں کیا صرف آپ لوگ ہی اسکو سمجھ سکتے ہیں؟؟؟؟
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  6. ‏نومبر 16، 2016 #36
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    اگر علماء کے اقوال کا یہی مطلب ہے کہ امام کا قول کبھی نہیں چھوڑنا تو آپ مجھے ایک حنفی کیوں نہیں دکھا دیتے جس نے ہر شرعی معاملہ میں امام کے قول کو نہ چھوڑا ہو
    آپ نے یہ کیسا مفہوم نکالا جو عملا موجود نہیں
    ہر مسلک میں جو اصول ہوتے ہیں اس مسلک میں اس پر عمل کیا جاتا ہے. یہ کیسا اصول ہے کہ صرف کتابوں میں ہے عملا نہیں. جب ایک چیز عملا نہیں ہے تو اس پر بحث کیوں. آخر علماء احناف نے بعض مواقع پر اپنے امام سے اختلاف کیوں کیا
    جب تک ہم رفع الیدین کرنا شروع نہیں کرتے امام کے پیچھے قرآت نہیں کریں گے آپ لوگ ہمیں حدیث کا مخالف ہی سمجھیں گے.
    یہی وہ سوچ ہے آپ کی جو علماء احناف کے اقوال کا صحیح مطلب سمجھنے میں آڑے آ رہی یے
     
  7. ‏نومبر 16، 2016 #37
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,043
    موصول شکریہ جات:
    1,039
    تمغے کے پوائنٹ:
    387

    معذرت!
    یہ میری بات کا جواب بالکل نہیں ہے
     
  8. ‏نومبر 16، 2016 #38
    مقبول احمد سلفی

    مقبول احمد سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    اسلامی سنٹر،طائف، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏نومبر 30، 2013
    پیغامات:
    980
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    158

    امام ابوحنیفہ ؒ نے شوال کے شش روزے والی حدیث سے جو مفہوم اخذ کیا ہے کیا وہ صحیح ہے ؟

    صحیح مسلم کی حدیث مع ترجمہ یہاں پیش کریں ۔
     
  9. ‏نومبر 16، 2016 #39
    مقبول احمد سلفی

    مقبول احمد سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    اسلامی سنٹر،طائف، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏نومبر 30، 2013
    پیغامات:
    980
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    158

    مجھے پہلے یہ بتادیں کہ حنفی مذہب میں مجتہد کون کون ہیں ؟ اس کے بعد بات کرنے اور سمجھنے میں فریقین کو آسانی ہوگی ۔
     
  10. ‏نومبر 16، 2016 #40
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    281
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    صحیح مسلم: كِتَابُ الصَّلَاةِ: بَابُ الْأَمْرِ بِالسُّكُونِ فِي الصَّلَاةِ:
    «مَا لِي أَرَاكُمْ رَافِعِي أَيْدِيكُمْ كَأَنَّهَا أَذْنَابُ خَيْلٍ شُمْسٍ؟ اسْكُنُوا فِي الصَّلَاةِ»

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے (صحابہ کرام کو نماز میں رفع الیدین کرتے دیکھ کر فرمایا کہ) یہ میں کیا دیکھ رہا ہوں کہ شریر گھوڑوں کی دموں کی طرح تم لوگ رفع الیدین کر رہے ہو؟ (حکم فرمایا کہ) نماز میں سکون سے رہو۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں