1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

جنت: جہاں اللہ تعالی خود نغمے سنائےگا؟؟؟

'تحقیق حدیث سے متعلق سوالات وجوابات' میں موضوعات آغاز کردہ از یوسف ثانی, ‏دسمبر 04، 2017۔

  1. ‏دسمبر 04، 2017 #1
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,763
    موصول شکریہ جات:
    5,270
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    جنت میں اللہ تعالی خود نغمے سنائےگا؟؟؟​
     
  2. ‏دسمبر 04، 2017 #2
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ !
    جنت میں ہر قسم کی راحت و شادمانی و فرحت کا سامان موجو د ہے۔
    اہل جنت کو اللہ تعالیٰ جنتی بیویوں کی زبانی نغمے سنوائے گا ؛
    یہ حدیث ملاحظہ فرمائیں :
    عن ابن عمر رضي الله عنهما قال قال رسول الله صلى الله عليه وسلم إن أزواج أهل الجنة ليغنين أزواجهن بأحسن أصوات سمعها أحد قط إن مما يغنين به نحن الخيرات الحسان أزواج قوم كرام ينظرون بقرة أعيان وإن مما يغنين به نحن الخالدات فلا نمتنه نحن الآمنات فلا نخفنه نحن المقيمات فلا نظعنه
    رواه الطبراني في الصغير والأوسط ورواتهما رواة الصحيح
    (صحیح الترہیب والترغیب کتاب صفۃ الجنۃ )
    ترجمہ:
    جنت کی عورتیں اپنے اپنے خاوندوں کے سامنے ایسی (خوبصورت) آوازوں میں نغمہ سرائی کریں گی جس کوکسی نے اس سے پہلے نہیں سنا ہوگا ،
    جوترانے وہ گائیں گی ان میں سے ایک یہ ہے (نحن الخيرات الحسان أزواج قوم كرام ينظرون بقرة أعيان (ہم بہت اعلیٰ درجہ کی حسین عورتیں ہیں بڑے درجہ کے لوگوں کی بیویاں ہیں وہ آنکھوں کی ٹھنڈک اور لذت سے لطف اندوز ہونے کے لیے ہمیں دیکھتے ہیں)
    وہ یہ ترانہ بھی گائیں گی (نحن الخالدات لایمتن نحن الآمنات فلايخفن نحن المقيمات فلايظعن (ہم ہمیشہ زندہ رہیں گی کبھی فوت نہ ہوں گی ہم ہمیشہ ہرطرح کی تکلیف سے امن میں ہیں کبھی خوف نہیں کریں گی، ہم دائمی طور پرجنت میں رہنے والیاں ہیں کبھی اس سے نکالی نہ جائیں گی)"
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

    اور اگر آپ کی تحریر کا مطلب ہے کہ اللہ تعالیٰ خود نغمیں سنائے گا ،تو کم از کم میرے محدود علم میں نہیں ،واللہ اعلم
     
    • علمی علمی x 5
    • پسند پسند x 2
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں