• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

رمضان انسائیکلوپیڈیا، کتب و مقالات تحقیق و تخریج کے ساتھ

شمولیت
جون 05، 2018
پیغامات
280
ری ایکشن اسکور
16
پوائنٹ
79
.

رمضان انسائیکلوپیڈیا، کتب و مقالات تحقیق و تخریج کے ساتھ

(روزہ، رمضان، تراویح، اعتکاف، شب قدر، صدقہ فطر اور عید الفطر وغیرہ سے متعلق تحقیق و تخریج والی کتب اور مقالات)

الحمد للہ، اس مرتبہ رمضان کتب انسائیکلوپیڈیا میں قارئین کی آسانی کے لئے، وقت کے ضائع ہونے سے بچانے اور عام و خاص کے فائدے کیلئے تحقیقی و سہل مواد پر مبنی کتب و مقالات کے لنکس پیش کئے جا رہے ہیں جنکی تعداد پچاس سے زیادہ ہے، گزشتہ مرتبہ واٹسپ پر جو "رمضان انسائیکلوپیڈیا" پیش کیا گیا تھا اسمیں سو سے زائد کتب پیش کئے گئے تھے جن میں تحقیقی و غیر تحقیقی، نئے و پرانے، کمپیوٹر کتابت اور ہاتھ کی کتابت وغیرہ سب طرح کے کتب جو کتاب و سنت پر مبنی تھے پیش کئے گئے تھے لیکن اس مرتبہ کمپوٹر کتابت یا یا کم از کم خوش خط رسم الخط والے کتب پیش کئے گئے ہیں اور ایسے تمام کتب کو فہرست سے نکال دیا گیا ہے جو کہ تحقیقی نہ تھے یا تحقیقی تو تھے لیکن حوالہ جات و تخریج نہ تھی یا خوش خط رسم الخط میں نہ تھے گرچہ کہ وہ بھی علمی یا تحقیقی کتب تھے اور ایسے کتب بھی نکال دئے گئے ہیں جو خوش خط تو تھے لیکن صحیح احادیث پر مبنی نہ تھے یا حوالہ جات نہ تھے اور ایسے کتب بھی نکال دئے گئے جو کہ تحقیق شدہ اور کمپوٹر کتابت کے تو تھے لیکن کتاب کی پرنٹ کا بہت سا حصہ صحیح اور صاف نہ تھا نیز صرف سلفی علماء ہی کے کتب پیش کرنے کی کوشش کی گئ ہے.
خادمِ خدامِ اسلام
*سید محمد عزیر ادونوی*
18-06-2018

https://salafitehqiqilibrary.wordpress.com/2019/09/05/رمضان-انسائیکلوپیڈیا-کتب-تحقیق-و-تخری/

~~~~

Salafi Tehqiqi Library
سلفی تحقیقی لائبریری

Website:
ویبسائٹ:
https://salafitehqiqilibrary.wordpress.com/

Whatsapp Group:
واٹسپ گروپ:

1.
https://chat.whatsapp.com/5lh9ELcMTj3Igie3HuAUZj

2.
https://chat.whatsapp.com/4IdtkLs7vPiK7RcXxbe2rG

3.
https://chat.whatsapp.com/BhpsT7TTHrBIi7ujN32N2w

4.
https://chat.whatsapp.com/Gv1FwjxaTNvE3dn1CPalyk

فیس بک گروپ:
https://www.facebook.com/groups/395556037590676/

ٹیلی گرام چینل:
Telegram Channel:
https://t.me/salafitehqiqitutub

~~~~

شئیر

.
 

غرباء

رکن
شمولیت
جولائی 11، 2019
پیغامات
86
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
46
اس دعا کی تحقیق درکار ہے کیا یہ دعا پڑھنا سنت سے ثابت ہے برائے مہربانی جواب دے دیں
 

اٹیچمنٹس

محمد نعیم یونس

خاص رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
اپریل 27، 2013
پیغامات
26,582
ری ایکشن اسکور
6,751
پوائنٹ
1,207
اس دعا کی تحقیق درکار ہے کیا یہ دعا پڑھنا سنت سے ثابت ہے برائے مہربانی جواب دے دیں
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!

الحمد اللہ:
نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" نماز وتر کے بعد کہا کرتے تھے، اس لیے نمازیوں کیلیے اس سنت پر عمل کرنا مسنون ہے چاہے وہ وتر مسجد میں ادا کریں یا اپنی سونے کی جگہ میں، اسی طرح چاہے وتر اکیلے ادا کریں یا باجماعت۔
تاہم قیام اللیل یا تراویح کی رکعات کے درمیان میں اس ذکر کی پابندی کرنا شرعی عمل نہیں ہے؛ کیونکہ یہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت نہیں بلکہ صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم سے بھی ثابت نہیں ہے، اس لیے مسلمان کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ کسی کام کے کرنے یا چھوڑنے پر صرف سنت کو ہی معیار سمجھے اور کسی بھی قسم کی کمی بیشی سے اجتناب کرے۔
عبد الرحمن بن ابزی رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم وتروں میں یہ سورتیں پڑھا کرتے تھے: ((سَبِّحِ اسْمَ رَبِّكِ الْأَعْلَى) اسی طرح (قُلْ يَا أَيُّهَا الْكَافِرُونَ) اور پھر (قُلْ هُوَ اللَّهُ أَحَدٌ) پھر جب سلام پھیر لیتے تو تین بار فرماتے : "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" تیسری بار کہتے ہوئے آواز قدرے بلند فرماتے)
اس روایت کو أبوداود طیالسی نے "المسند" (1/441) میں اسی طرح ابن جعد نے اپنی "المسند" (1/86) میں اور ابن ابی شیبہ نے "المصنف" (2/93) اور امام احمد نے اپنی "مسند" (24/72) میں اور دیگر محدثین نے بھی روایت کیا ہے، اس حدیث کی بہت سی اسانید ہیں اور ان اسانید کو کئی محدثین اور محققین مثلاً: ابن ملقن، البانی، شیخ مقبل الوادعی، مسند احمد کے طبعہ رسالہ کے محققین اور دیگر اہل علم نے صحیح قرار دیا ہے۔
محدثین نے اس حدیث پر ابواب قائم کئے ہیں جن سے معلوم ہوتا ہے کہ یہ ذکر وتروں کے بعد پڑھنا مستحب ہے، چنانچہ ابن ابی شیبہ نے اس کیلیے عنوان قائم کیا: "آدمی وتروں کے بعد کیا دعا پڑھے"
اسی طرح ابو داود رحمہ اللہ کہتے ہیں: "باب ہے وتروں کے بعد کی دعا کے متعلق"
امام نسائی رحمہ اللہ کہتے ہیں: "باب ہے وتروں سے فراغت کے بعد تسبیح کے متعلق"
اور ابن حبان نے اپنی صحیح ابن حبان (6/206) میں عنوان قائم کیا ہے کہ: "باب ہے اس ذکر کے بیان میں جسے وتروں کے بعد پڑھنا مستحب ہے"
امام نووی رحمہ اللہ کہتے ہیں:
"وتروں کے بعد تین مرتبہ "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" کہنا مستحب ہے" انتہی
"المجموع شرح المهذب" (4/ 16)، اور اسی طرح دیکھیں: "تحفة المحتاج" (2/227)
ابن قدامہ رحمہ اللہ کہتے ہیں:
"وتروں کے بعد تین بار "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" کہنا مستحب ہے اور تیسری بار کہتے ہوئے اپنی آواز بلند کرے" انتہی
"المغنی" (2/ 122)
یہی بات دائمی فتوی کمیٹی کے فتاوی کے دوسرے ایڈیشن (6/60) میں آئی ہے:
"جب وتروں کا سلام پھیر لے تو "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" تین بار کہے۔" انتہی
چنانچہ ہمیں کوئی ایسا اہل علم نہیں ملا جنہوں نے "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" کو وتروں کی نماز کے علاوہ کہنے کو مستحب قرار دیا ہو۔
ہماری ویب سائٹ پر پہلے ہی وضاحت گزر چکی ہے کہ بعض مساجد میں تراویح کی رکعات کے دوران اجتماعی اذکار عادت بنا لی گئی ہے، یہ اذکار استغفار یا تسبیح وغیرہ پر مشتمل ہوتے ہیں، حالانکہ کسی بھی ذکر کو اجتماعی طور پر بغیر کسی دلیل کے کرنا انسان کو بدعات کی جانب لے جاتا ہے اور سنت سے دور کر دیتا ہے۔
خلاصہ یہ ہوا کہ :
تراویح کی رکعات کے دوران "سُبْحَانَ الْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ" کہنا نمازیوں کیلیے شرعی عمل نہیں ہے، اسے صرف وتروں کے بعد کہا جائے گا، اسی طرح اجتماعی استغفار بھی تراویح کی رکعات کے درمیان کرنا جائز نہیں ہے، اگرچہ انفرادی استغفار اور تسبیح کرنا جائز ہے۔
واللہ اعلم

حوالہ:
https://islamqa.info/ur/answers/221433/
 
Top