• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

غسل جنابت کی جگہ صرف وضو کرنا

غسل جنابت واجب ہو اور جگہ میسر نا ہو لیکن پانی میسر ہو تو

  • تیمم کرنا لازمی ہے بے شک پانی میسر ہو۔

    ووٹ: 0 0.0%

  • Total voters
    2
شمولیت
اپریل 05، 2019
پیغامات
2
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
2
کیا غسل جنابت کی جگہ صرف وضو کرنا کافی ہوگا اگر پانی میسر ہو لیکن غسل کے لیے جگہ میسر نا ہو؟
 
شمولیت
اگست 28، 2018
پیغامات
197
ری ایکشن اسکور
4
پوائنٹ
65
أولا : غسل جنابت میں پانی ہو اور وضو کرنا ممکن نا ہو اس کی وضاحت مطلوب ہے کیا ایسی بھی کوئی جگہ ممکن ہے بھی؟ یا پھر......؟ سوال اس وقت پوچھا جائے جب اس کی ضرورت ہو یا ایسی چیز کا وقوع ممکن ہو بلا وجہ کے سوالات گھڑنا اسلاف کا طریقہ نہیں ہے
ثانیاً : اگر ایسا ممکن بھی ہے تو کپڑے وغیرہ کو پانی سے بھگو کر جسم کی ممکنہ جگہوں کو خاص طور پر شرمگاہ کو خوب اچھی طرح پونچھ لے، یہی پانی سے پوچھنا غسل کے قائم مقام ہوگا ان شاء اللہ اللہ کا فرمان ہے "لا يكلف الله نفسا إلا وسعها"
 
شمولیت
اپریل 05، 2019
پیغامات
2
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
2
میرے سوال میں وضو کے لیے جگہ موجود ہے اور پانی بھی لیکن غسل کے لیے پانی تو موجود ہے لیکن کوئی بند جگہ یا غسل خانہ نہیں۔
 
Top