• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

والدہ کے ترکہ کی تقسیم

شمولیت
اکتوبر 11، 2011
پیغامات
90
ری ایکشن اسکور
116
پوائنٹ
70
میرا سوال ہے کہ والدہ کے ترکہ کی تقسیم کیسے ہو گی۔

والد صاحب ہیں
دو بیٹے اور دو بیٹیاں ہیں۔

آن کا ایک مکان بیچا ہے اور حصے معلوم کرنا ہیں۔

Sent from my SM-N950F using Tapatalk
 
شمولیت
اگست 28، 2018
پیغامات
197
ری ایکشن اسکور
5
پوائنٹ
65
میرا سوال ہے کہ والدہ کے ترکہ کی تقسیم کیسے ہو گی۔

والد صاحب ہیں
دو بیٹے اور دو بیٹیاں ہیں۔

آن کا ایک مکان بیچا ہے اور حصے معلوم کرنا ہیں۔

Sent from my SM-N950F using Tapatalk
سوال واضح نہیں ہے
شاید سائل کی مراد یہ ہے کہ وفات پانے والی خاتون نے اپنے بعد شوہر اور دو بیٹے اور دو بیٹیاں چھوڑی ہیں؟
 
شمولیت
اگست 28، 2018
پیغامات
197
ری ایکشن اسکور
5
پوائنٹ
65
اگر بات ایسی ہی ہے تو مذکورہ بالا صورت میں شوہر کو چوتھائی ملے گا اور بیٹیاں بیٹوں کے ساتھ عصبہ ہوں گی اور باقی بچا مال ان کے درمیان سنگل (لڑکیوں کو) ڈبل (لڑکوں کو) کے اعتبار سے تقسیم ہوگا اصل مسئلہ چار سے اور تصحیح کے بعد آٹھ سے ہوگا یعنی پورے مال کو آٹھ حصوں میں کر لیں گے چوتھائی یعنی دو شوہر کو ملے گا ہر ایک لڑکے کا دو دو اور مجموعی چار ہوگا، ہر ایک لڑکی کا ایک ایک مجموعی دو ہوگا
 
شمولیت
اکتوبر 11، 2011
پیغامات
90
ری ایکشن اسکور
116
پوائنٹ
70
سوال واضح نہیں ہے
شاید سائل کی مراد یہ ہے کہ وفات پانے والی خاتون نے اپنے بعد شوہر اور دو بیٹے اور دو بیٹیاں چھوڑی ہیں؟
بلکل ایسا ہی ہے۔

Sent from my SM-N950F using Tapatalk
 
Top