1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قاتل حسين يزيد نہيں بلکہ کوفي شيعہ ہيں , يزيد بريء ہے

'اہل تشیع' میں موضوعات آغاز کردہ از رفیق طاھر, ‏اپریل 02، 2012۔

  1. ‏جولائی 05، 2012 #31
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,770
    موصول شکریہ جات:
    9,777
    تمغے کے پوائنٹ:
    722



    آپ کے جواب پرافسوس ہے جناب !
    یزیدرحمہ اللہ پرآپ نے جوتہمت لگائی ہے اس سے قطع نظر سوال یہ ہے کہ کیا علی رضی اللہ عنہ کی سنت کی پیروی کرنا اوران کے نقش قدم پرچلنا ناجائز ہے؟؟؟؟؟؟
    اگرجائز ہے اوریہی درست بھی ہے کیونکہ حدیث میں خلفائے راشدین کی سنت کی پیروی کاحکم ہے تو ایسی صورت میں یزید رحمہ اللہ نے سنت علی رضی اللہ عنہ کی پیروی ہی تو کی ہے ! اس میں اتنا زیادہ بوکھلانے کی کیابات ہے۔

    تعجب ہے آپ اسے موازنہ کا نام دے رہے ہیں ، گویا کہ آپ کو تسلیم ہے کی علی رضی اللہ عنہ اپنے اقدامات میں غلطی کے مرتکب ہوئے اوریہی غلطی کوئی اوردہرائے تو اس کا موازنہ علی رضی اللہ عنہ کے ساتھ نہیں ہوسکتا۔

    اوراگرآپ علی رضی اللہ عنہ کے اقدامات کو غلط نہیں سمجھتے توبتلائے ایک صحیح کام جسے علی رضی اللہ عنہ انجام دیں ، کیا دوسرے لوگ بھی وہی صحیح کام نہیں کرسکتے ! پھر اگرصحیح نہیں تو کیا غلط کاموں میں علی رضی اللہ عنہ کے نقش قدم کی پیروی کی جائے ۔

    یہ عجیب منطق ہے۔
     
  2. ‏جولائی 05، 2012 #32
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,770
    موصول شکریہ جات:
    9,777
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    آپ ذرا مستندحوالے سے یہ ثابت کردیں کہ علی رحمہ اللہ کی خلافت کو کتنے صحابہ نے قبول کیا ؟؟؟
    آپ کوخود اندازہ ہوجائے گا کہ ان کے مخالفین کتنے صحابہ رضی اللہ عنہم تھے۔
     
  3. ‏جولائی 05، 2012 #33
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    ویسے اس ساری بحث کا ایک فائدہ ضرور ہوا کہ آپ نے یزید کے متعلّق اپنا موقف لعنت

    http://www.kitabosunnat.com/forum/بادشاہت-572/کیا-یزید-پر-لعنت-کرنا-جائز-ہے۔-6920/

    سے پھیر تک فسق وفجور تک محدود کر دیا ہے۔

    یا پھر یہاں آپ نے تقیہ سے کام لیا ہے۔

    اس عبارت کے ایک ایک لفظ سے رافضیت ٹپک رہی ہے، اس کے باوجود شدّ ومد سے یہ دعویٰ:
    ڈھٹائی ہے۔

    یہاں بھی میں یہ کہنے پر مجبور ہوں کہ اگر آپ اہل حدیث ہیں تو آپ کا یہ موقف ان کے منہج کے شدید منافی ہے۔

    اور یا پھر

    آپ تقیہ سے کام لے رہے ہیں!!!

    اکثر صحابہ کرام﷢ فتح مکہ کے بعد ہی مسلمان ہوئے تھے کیا فتح مکہ کے بعد مسلمان ہونے سے صحابیت پر حرف آتا ہے؟؟؟

    ﴿ لَا يَسْتَوِي مِنكُم مَّنْ أَنفَقَ مِن قَبْلِ الْفَتْحِ وَقَاتَلَ ۚ أُولَـٰئِكَ أَعْظَمُ دَرَ‌جَةً مِّنَ الَّذِينَ أَنفَقُوا مِن بَعْدُ وَقَاتَلُوا ۚ وَكُلًّا وَعَدَ اللَّـهُ الْحُسْنَىٰ ۚ وَاللَّـهُ بِمَا تَعْمَلُونَ خَبِيرٌ‌ ١٠ ﴾ ۔۔۔ سورة الحديد
    تم میں سے جن لوگوں نے فتح سے پہلے فی سبیل اللہ دیا ہے اور قتال کیا ہے وه (دوسروں کے) برابر نہیں، بلکہ ان سے بہت بڑے درجے کے ہیں جنہوں نے فتح کے بعد خیراتیں دیں اور جہاد کیے۔ ہاں بھلائی کا وعده تو اللہ تعالیٰ کا ان سب سے ہے جو کچھ تم کر رہے ہو اس سے اللہ خبردار ہے (10)
     
  4. ‏جولائی 05، 2012 #34
    حرب بن شداد

    حرب بن شداد سینئر رکن
    جگہ:
    اُم القرٰی
    شمولیت:
    ‏مئی 13، 2012
    پیغامات:
    2,149
    موصول شکریہ جات:
    6,249
    تمغے کے پوائنٹ:
    437

    عثمان صاحب!۔ جب انسان کسی کی بھی ذات کو تعصب کی نظر سے دیکھتا ہے تو وہاں کیفیات بالکل ایسی ہی دکھائی دیتی ہیں جیسا اس وقت معاملہ آپ کے ساتھ چل رہا ہے۔۔۔ میں نے حضرت معاویہ رضی اللہ تعالٰی عنہ کے کاتب وحی ہونے کا ذکر اس لئے کیا یہ اعزاز اللہ تعالٰی نے انہیں دیا۔۔۔ المہم۔۔۔ یاد دہانی کا مقصد کیا تھا اُمید آپ سمجھ رہے ہونگے۔۔۔

    یہ ہی بات میں آپ کو سمجھانا چاہ رہا تھا لیکن ایک مہذب طریقے سے لیکن شاید آپ کو یہ ہی زبان پسند ہے لہذا آپ کے ہی الفاظ آپ کو کوٹ کردوں۔۔۔ اور جہاں تک بات ہے حق کو سمجھنے کی تو کیا ہم یہاں کوے کے حلال یا حرام ہونے پر بحث کررہے ہیں؟؟؟۔۔۔

    بالکل درست فرمایا آپ نے لیکن ہماری دُعا ہے اللہ آپ کے معاملے میں اپنا خصوصی کرم فرمائیں جب حساب کتاب کا وقت ہو۔۔۔ رہی بات شیعہ نہیں ہیں تو۔۔۔ ہوا چلتے ہوئے دکھائی نہیں دیتی مگر اس کے رُخ کو محسوس کیا جاتا ہے۔۔۔ سمت کا تعین اسی احساس سے ہوتا ہے۔۔۔ باقی اللہ بہتر جاننے والا ہے۔۔۔

    کون حواس باختہ ہے ملاحظہ کیجئے۔۔۔
    اب یہ بتائیں ہم یزید رحمہ اللہ کو لیکر گفتگو کررہے ہیں یا معاویہ رضی اللہ عنہ اور حضرت علی رضی اللہ عنہ کے درمیان معاملے پر؟؟؟۔۔۔

    آخر میں آپ کا ہی دیا ہوا جواب خود کے لئے کوٹ کئے دیتا ہوں۔۔۔
     
  5. ‏جولائی 05، 2012 #35
    s.s.salafi

    s.s.salafi مبتدی
    شمولیت:
    ‏جون 28، 2012
    پیغامات:
    15
    موصول شکریہ جات:
    60
    تمغے کے پوائنٹ:
    15

    اگر ھمارے بھائوں نے اسلامی قانون پرھے ھو تو انھیں پتا لگے کہ قصاص کا مطالبہ قریبی رشتہ دار کرتا ھے قصاص اسلام میں ایک ذاتی tort ya private لاء law ھے public law نھیں جس پر سزا کا مطلبہ حکومت کرتی ھے اصل میں ھم مغربی تھزیب سے اتنا متاثر ھے کہ اسلامی قوانین کو بھول چکے ھیں اور پھر بڑے مزے سے کھتے ھے کہ یزید نے دین بدل دیا اور خود بے دین دلائل پیش کرتے ھیں یزید کے خلاف
     
  6. ‏جولائی 06، 2012 #36
    نوید عثمان

    نوید عثمان رکن
    شمولیت:
    ‏جنوری 24، 2012
    پیغامات:
    181
    موصول شکریہ جات:
    119
    تمغے کے پوائنٹ:
    53

    حضرت علی رض کو لوگوں نے خلیفہ بنایا تھا یا وہ خود بن گئے ؟؟؟؟؟؟؟ یا پھر انہوں نے بھی معاویہ کے طرح ڈکیٹر شپ کے ذریعے اقتدار پر قبضہ حاصل کیا تھا؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟
     
  7. ‏جولائی 06، 2012 #37
    نوید عثمان

    نوید عثمان رکن
    شمولیت:
    ‏جنوری 24، 2012
    پیغامات:
    181
    موصول شکریہ جات:
    119
    تمغے کے پوائنٹ:
    53

    افسوس کہ آپ کے دل میں بغض علی رض اتنا سرایت کر گیا ہے کہ آپ نے انھیں صحابہ کرام کی فہرست میں سے بھی نکال دیا اور ان کے رضی اللہ کی بجائے رحمہ اللہ لکھ رہے ہو تلک شئی عجاب۔۔۔۔۔۔۔
    سوائے شامیوں کے کوئی بھی ان کی خلافت کا منکر نہیں تھا اگر تھا تو آپ ثابت کریں۔
     
  8. ‏جولائی 06، 2012 #38
    نوید عثمان

    نوید عثمان رکن
    شمولیت:
    ‏جنوری 24، 2012
    پیغامات:
    181
    موصول شکریہ جات:
    119
    تمغے کے پوائنٹ:
    53

    فتح مکہ کے بعد مسلمان ہونے والے ان لوگوں کے درجات کو نہیں پہنچ سکتے جو فتح سے پہلے مسلمان ہوئے تھے ۔ صحابیت پر حرف نہیں درجات میں فرق ضرور آ جاتا ہے جیسا کہ آپ نے خود ہی اوپر ایک ایک آیت کوڈ کر دی ہے۔
     
  9. ‏جولائی 06، 2012 #39
    نوید عثمان

    نوید عثمان رکن
    شمولیت:
    ‏جنوری 24، 2012
    پیغامات:
    181
    موصول شکریہ جات:
    119
    تمغے کے پوائنٹ:
    53

    آئینہ ان کو دکھایا تو برا مان گئے
     
  10. ‏جولائی 06، 2012 #40
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,770
    موصول شکریہ جات:
    9,777
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    پہلی بات تو یہ کی علی رضی اللہ عنہ کو میں نے ہرجگہ رضی اللہ عنہ ہی لکھا ہے ، ایک جگہ غلطی سے رحمہ اللہ لکھا گیا تو آپ اسے بغض علی سے تعبیرکررہے ہیں بلکہ یہاں تک الزام لگارہے ہیں کہ میں نے انہیں صحابہ کی فہرست سے نکال دیا ، نعوذ باللہ من ذلک۔
    ٹائپنگ میں اس طرح کی غلطیاں ہوجاتی ہیں اورسنجیدہ قارئین خود ہی سمجھ جاتے ہیں کہ یہ ٹائپنگ کی غلطی ہے ، ٹائپنگ کی غلطیوں کو بنیاد بناکر بہتان تراشی کرنا بس آپ ہی جیسے لوگوں کا کام ہوسکتاہے۔

    رہا آپ کا یہ کہنا
    تو عرض ہے کہ:
    اولا : اس بات کی عمومی صراحت دکھلائیں کہ پوری امت نے علی رضی اللہ عنہ کی خلافت تسلیم کرلی تھی ، اگریہ یہ عمومی صراحت مل جائے گی تبھی صرف اہل شام کی تخصیص ہوسکتی ہے۔
    ثانیا: کیا اماں عائشہ رضی اللہ عنہا کاتعلق بھی شام سے تھا؟؟؟
    ثالثا: کیا شام میں صحابہ کرام موجود نہ تھے کیا وہاں صرف امیرمعاویہ رضی اللہ عنہ ہی تنہا مقیم تھے؟؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں