• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

جمعہ کے دن سورت کہف کی تلاوت

شمولیت
اپریل 27، 2020
پیغامات
216
ری ایکشن اسکور
54
پوائنٹ
41
جمعہ کے دن سورت کہف کی تلاوت

تحریر: شیخ الحدیث علامہ غلام مصطفیٰ ظہیر امن پوری


جمعہ کے دن سورت کہف پڑھنے کی فضیلت ثابت نہیں۔ اس بارے میں حدیث ضعیف ہے۔


سیدنا ابو سعید خدری رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:
"إِنَّ مَنْ قَرَأَ سُورَۃَ الْکَہْفِ یَوْمَ الْجُمُعَۃِ أَضَاءَ لَہ، مِنَ النُّورِ مَا بَیْنَ الْجُمُعَتَیْنِ."

'”جس نے جمعہ کے دن سورت کہف کی تلاوت کی، اللہ تعالیٰ اس کے لیے دو جمعوں کے درمیان نور روشن فرما دیتا ہے۔“
[المستدرک للحاکم : 368/2]

سنن دارمی (3450) میں یہی روایت موقوف آئی ہے۔
سند ضعیف ہے۔ ہشیم بن بشیر واسطی نے یہ حدیث ابو ہاشم رمانی سے نہیں سنی۔


امام احمد بن حنبل رحمہ اللہ فرماتے ہیں:
"لَمْ یَسْمَعْہُ ہُشَیْمٌ مِنْ أَبِي ہَاشِمٍ."

”یہ روایت ہشیم نے ابو ہاشم سے نہیں سنی۔“

[العِلَل ومعرفۃ الرجال بروایۃ عبد اللّہ : 251/2]

جس سند میں ہشیم کے ''حدثنا'' کہنے کا ذکر ہے، وہ کسی راوی کا وہم ہے یا ہشیم نے خود ایسا کہا ہے، مگر انہوں نے یہ حدیث ابو ہاشم سے نہیں سنی، جیسا کہ امام احمد رحمہ اللہ نے فرمایا ہے، ہشیم ان روایات میں بھی ''حدثنا'' کہہ دیتے تھے، جو انہوں نے اپنے شیوخ سے نہیں سنی ہوتی تھیں، جس کا اقرار وہ خود بھی کرتے ہیں، ملاحظہ ہو۔

امام یحییٰ بن معین رحمہ اللہ فرماتے ہیں:
"سَمِعْتُ ہُشَیْمًا یُحَدِّثُ یَوْمًا فَقَالَ : حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ زَیْدٍ ثُمَّ ذَکَرَ أَنَّہ، لَمْ یَسْمَعْہُ مِنْ عَلِيِّ بْنِ زَیْدٍ."

'”میں نے ہشیم کو سنا وہ ایک دن حدیث بیان کر رہے تھے : حدثنا علی بن زید، پھر فرمانے لگے کہ میں نے یہ حدیث علی بن زید سے نہیں سنی.“
[تاریخ ابن معین بروایۃ الدوري : 4921]

امام ابن معین رحمہ اللہ مزید فرماتے ہیں:
"أَخْطَأَ عَبْدُ الرَّحْمٰنِ بْنُ مَہْدِيٍّ یَوْمًا فَقَالَ حَدَّثَنَا ہُشَیْمٌ قَالَ : حَدَّثَنَا مَنْصُورٌ وَلَمْ یَکَنْ ہُشَیْمٌ سَمِعَہ، مِنْ مَنْصُورٍ."

”ایک دن عبد الرحمن بن مہدی رحمہ اللہ نے (حدیث بیان کرنے میں) خطا کی، کہنے لگے : حدثنا ہشیم قال : حدثنا منصور۔ جبکہ ہشیم نے اس روایت میں منصور سے سماع نہیں کیا۔“

[تاریخ ابن معین بروایۃ الدوري : 3620]

معلوم ہوا کہ جمعہ کے دن سورت کہف پڑھنے کے بارے میں حدیث ثابت نہیں، کیونکہ ہشیم بن بشیر نے اس روایت میں ابو ہاشم رمانی سے سماع نہیں کیا، جیسا کہ امام احمد رحمہ اللہ نے فرمایا ہے اور جہاں ''حدثنا'' ہے، وہ سماع کی صراحت نہیں۔
 
شمولیت
جون 07، 2015
پیغامات
175
ری ایکشن اسکور
31
پوائنٹ
86
ماشاء اللہ ۔بہت خوب۔شیخ محترم
یہاں ایک اور مسئلہ میں بھی رہنمائی فرمائیے ۔بعض احادیث میں منقول ہے کہ سورۂ کہف کی تلاوت سےایک مسلمان فتنہ دجال سے محفوظ رہتا ہے ۔
اسی طرح بعض احادیث میں بات بھی وارد ہے کہ جس مسلمان نے سورہ کہف کی ابتدائی دس آیات کو حفظ کر لیا وہ فتنہ دجال سے محفوظ رہے گا ۔
اور بعض دوسری احادیث کے مطابق سورہ کہف کی آخری دس آیات کے بارے میں یہ بات منقول ہے ۔
اب اس حوالے سےمیرا پہلا سوال تو یہ ہے کہ :
سورہ کہف اورفتنۃ الدجال سے بچاؤ کے عمل میں کیا تعلق ہے ،کیونکہ سورہ کہف میں جو مضامین بیان ہوئے ہیں وہ کم و بیش کسی نہ کسی دوسری سورہ میں بھی بیان ہوئےہیں ،پس کیا سورہ کہف کی یہ فضیلت دلائل کی روشنی میں درست ہے ؟ یا یہ بھی کوئی عوامی بات ہے یاغلط فیمی پر مبنی ہے ؟؟؟؟
دوسرا سوال یہ ہے کہ:یہ فضیلت کیا پہلی آیات کے ساتھ درست ہے یا آخری دس آیات کے ساتھ ؟؟؟
یہ سوالات میں نےدینِ اسلام کے ایک ادنیٰ طالبعلم کی حیثیت سےصرف تفہیمِ دین کی نیت سے کیے ہیں ۔مجھے امید ہے کہ شیخ محترم اپنے قیمتی وقت میں سے چند لمحے عطا فرما کراور اس مسئلہ میں درست رہنمائی فرما کر ممنون فرمائیں گے ۔
اللہ تعالیٰ آپ کی تمام علمی کاوشوں کو شرفِ قبول عطا فرمائے اور ذخیرہ آخرت فرمائے اور آپ کواور شیخ ابو یحییٰ نورپوری حفظہ اللہ، اور تمام علمائے حق کو حاسدین کے شر سے محفوظ رکھے۔آمین
 

الرقیم

مبتدی
شمولیت
مارچ 26، 2020
پیغامات
3
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
9
السلام علیکم
بہت اچھا اور معیاری سوال ہے۔
آپ کے تمام سوالات کا جواب اس لنک میں ہے
اردو زبان میں https://archive.org/details/alraqeem-urdu_edition/page/193/mode/2up
انگریزی زبان میں https://archive.org/details/alraqeem-english_edition/page/193/mode/2up
اگر آپ کو یہ مختصر کتابچہ پسند آئے تو اسے احباب کے ساتھ ضرور شیئر کریں۔ اس کو یہاں سے ڈاؤن لوڈ کیا جا سکتا ہے۔
 
شمولیت
جون 07، 2015
پیغامات
175
ری ایکشن اسکور
31
پوائنٹ
86
جزاک اللہ برادر! ڈاؤنلوڈ کر رہا ہوں ۔مطالعے کے بعد اپنے تاثرات آپ سے شئیر کروں گا ۔نیز اگر مزید رہنمائی کی ضرورت ہوئی تو آپ کو مزید تکلیف بھی دوں گا ۔
 
Top