• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قرآنی اور حدیثی تعویذ لٹکانا شرک ہے؟

حافظ عمران الہی

سینئر رکن
شمولیت
اکتوبر 09، 2013
پیغامات
2,101
ری ایکشن اسکور
1,451
پوائنٹ
344
میں نے یہ تھریڈ صرف اس لیے بنایا ہے کہ لوگ قرآنی تعویذ کو شرک کہنے سے باز آجائیں اور جن بھائیوں کے لیے میں نے یہ تھریڈ بنایا ہے اور جن سے میں مخاطب ہوں وہ اب تک سامنے نہیں آ رہے ہیں عبدہ بھائی میں نے اب تک آپ کو ایک جواب بھی نہین دیا ہے میں بھی تعویذ قرآن کو ممنوع ہی خیال کرتا ہوں مگر جو لوگ اسے شرک کہہ رہے ہیں وہ بھی ایک حرام کام کا ارتکاب کر رہے اس لیے ان بھائیوں کو اس حرام کام سے باز آ جانا چاہیے
 

حافظ عمران الہی

سینئر رکن
شمولیت
اکتوبر 09، 2013
پیغامات
2,101
ری ایکشن اسکور
1,451
پوائنٹ
344
قرآنی اور حدیثی تعویذ کے بارے بعض علما کا یہ موقف بھی ہے:
"بنظر غائر دیکھا جائےتو قائلین جواز کا قول ہی راجح معلوم ہوتا ہےکیونکہ مانعین نےجن تین وجوہ کی بنا پر ممانعت کا موقف اپنایا ہے،ان میں سے آخری دو وجہیں(شرکیہ تعویذات کی راہ کھلنے کا خطرہ اور اہانت قرآن کا اندیشہ)اضافی نوعیت کی ہے۔گویا اگر قرآنی تعویذات شرکیہ تعویذوں یا قرآن کی بے آدبی کا ذریعہ نہ بنیں تو اصلاً یہ جائز ہیں۔رہی یہ بات کہ حدیث شریف میں تعویذات کی عمومی ممانعت آئی ہےاور قرآنی تعویذ بھی اس عموم میں داخل ہونے کی وجہ سے حرام ہیں تو اس کے جواب میں کہا جاسکتا ہےکہ ام المومنین حضرت عائشہ اور سیدنا عبداللہ بن عمرو بن عاص رضی اللہ عنہما کے طرز عمل سے ان کی تخصیص ہوجاتی ہے۔نیز مسئلہ کی نوعیت سے معلوم ہوتا ہےکہ اسمیں اجتہاد کو دخل نہیں،فلہذا ان صحابہ کے آثار حکما مرفوع شمار ہوں گے۔مسئلہ زیر بحث پر تفصیلی بحث کے لیے ملاحظہ ہو:مغنی المرید الجامع لشروح کتاب التوحید،تالیف عبدالمنعم ابراہیم،ج۲/ص۹۱۵تا۹۲۴فاضل مؤلف نے اس مسئلہ پر مفصل کلام کیا ہےاور تمام گروہوں کے دلائل پیش کرکے ان کا تجزیہ کرتے ہوئے قرآنی اور مسنون دعاؤں پر مشتمل تعویذوں کے جواز ہی کو راجح قرار دیا ہے۔بحث انتہائی مفید اور قابل مطالعہ ہے۔"
 

عبدہ

سینئر رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
نومبر 01، 2013
پیغامات
2,038
ری ایکشن اسکور
1,223
پوائنٹ
425
میں نے یہ تھریڈ صرف اس لیے بنایا ہے کہ لوگ قرآنی تعویذ کو شرک کہنے سے باز آجائیں اور جن بھائیوں کے لیے میں نے یہ تھریڈ بنایا ہے اور جن سے میں مخاطب ہوں وہ اب تک سامنے نہیں آ رہے ہیں عبدہ بھائی میں نے اب تک آپ کو ایک جواب بھی نہین دیا ہے
محترم بھائی میں بھی اسی بحث کو چھیڑنا چاہتا ہوں جس کو آپ چھیڑنا چاہتے ہیں مگر میری کم علمی کہ آپ کو سمجھا نہیں پا رہا
دیکھیں نیچے آپ نے کچھ علماء کا ہی ذکر کیا ہے جو شرک کہتے ہیں اور پھر انکے اس فعل کو بھی حرام کہا ہے
میں نے بعض علما کے بارے پڑھا اور سنا وہ قرآنی تعویذ کو شرک قرار دیتے ہیں کیا وہ لوگ خود حرام کا ارتکاب نہین کر رہے؟
جو لوگ اسے شرک کہہ رہے ہیں وہ بھی ایک حرام کام کا ارتکاب کر رہے اس لیے ان بھائیوں کو اس حرام کام سے باز آ جانا چاہیے
محترم بھائی واللہ میری اس موضؤع پر ابھی اتنی تحقیق نہیں لیکن کچھ اور موضوعات پر تجربہ کی وجہ سے شک پڑتا ہے کہ جو شرک کہتے ہیں اور جو نہیں کہتے ان میں اصل اختلاف سمجھنے کا ہو سکتا ہے
مثلا دیکھیں اللہ کے نبی کو قبر میں دنیاوی زندگی کی طرح زندہ ماننے کو غالبا ناصر الدین البانی رحمہ اللہ نے بدعت کہا ہے مگر کچھ اہل حدیث اسکو شرک بھی کہتے ہیں اسی طرح کسی کے وسیلہ سے دعا مانگنے کو بھی بدعت سمجھا جاتا ہے مگر دوسری طرف 10 نواقض اسلام میں ایک نواقض بھی یہی وسیلہ ہے
اسکی وجہ یہ ہے کہ جس وسیلے کو ناقض کہا گیا ہے وہ کسی اور عقیدہ کے ساتھ ہے اور جسکو بدعت کہتے ہیں وہ کسی اور عقیدہ کے ساتھ ہوتا ہے اسی طرح جس حیات کو بدعت کہا جاتا ہے وہ کسی اور عقیدہ کے تحت حیات ماننا ہوتا ہے اور جس حیات کو شرک کہتے ہیں وہ علماء کسی اور عقیدہ کے تحت اسکو سمجھ رہے ہوتے ہیں
پس میں نے سوچا تھا کہ آپ پہلے وہ تعویذ بتائیں جن کو متفقہ شرک کہا جاتا ہے پھر اس سے علت نکالیں پھر دیکھیں کہ جو علماء ہر قسم کے تعویذ کو شرک کہتے ہیں انکے ہاں وہ کس پہلو سے لیا جاتا ہے اگر وہ ایسے پہلو سے لیا جاتا ہے کہ جس میں شرک آتا ہے اور آپ قرآنی تعویذ کو جس پہلو سے لیتے ہیں اس میں واقعی شرک نہیں آتا تو پھر تو اختلاف نہ ہوا
اور دوسرا میں نے یہ بھی پوچھا تھا کہ آپ جس فعل کو حرام کہ رہے ہیں تو دوسرے مانعین تعویذ اس کو منع کس طرح کرتے ہیں آیا وہ اسکو بدعت سمجھتے ہیں یا کچھ اور
استادِ محترم حافظ طاہر اسلام عسکری اور محترم خضر حیات بھائی کیا میں نے ٹھیک سوچا ہے
اسی کے تحت میں نے اوپر پوسٹ نمبر 10 میں مندرجی ذیل باتیں پوچھی تھیں
میرے سوالات
1-جو علماء مانعین ہیں وہ ان تعویذوں سے منع تو کرتے ہیں مگر آپ نے یہ نہیں بتایا کہ وہ کیا حکم لگا کر منع کرتے ہیں مشرک تو نہیں کہتے ہوں گے جسے آپ ثابت کر رہے ہیں اور مباح بھی نہیں کہتے ہوں گے کیونکہ منع پھر کیسے کرتے تو کیا وہ انکو بدعت گردانتے ہیں
2-جو تعویذ سب کے ہاں شرک ہیں وہ کون سے ہیں اور انکے شرک ہونے کی علت کیا ہے تاکہ جو علماء مطلقا تعویذ کو شرک کہتے ہیں انکی دلیل کو دیکھا جا سکے
اللہ آپ کو جزائے خیر دے امین
صلاح الدین یوسف حفظہ اللہ کا موقف-------
اس پر معلومات انشاء اللہ اوپر وضاحت کے بعد لوں گا
 

محمد ارسلان

خاص رکن
شمولیت
مارچ 09، 2011
پیغامات
17,865
ری ایکشن اسکور
41,090
پوائنٹ
1,155
میں نے یہ تھریڈ صرف اس لیے بنایا ہے کہ لوگ قرآنی تعویذ کو شرک کہنے سے باز آجائیں اور جن بھائیوں کے لیے میں نے یہ تھریڈ بنایا ہے اور جن سے میں مخاطب ہوں وہ اب تک سامنے نہیں آ رہے ہیں عبدہ بھائی میں نے اب تک آپ کو ایک جواب بھی نہین دیا ہے میں بھی تعویذ قرآن کو ممنوع ہی خیال کرتا ہوں مگر جو لوگ اسے شرک کہہ رہے ہیں وہ بھی ایک حرام کام کا ارتکاب کر رہے اس لیے ان بھائیوں کو اس حرام کام سے باز آ جانا چاہیے
وَلَا تَقُولُوا لِمَا تَصِفُ أَلْسِنَتُكُمُ الْكَذِبَ هَـٰذَا حَلَالٌ وَهَـٰذَا حَرَامٌ لِّتَفْتَرُوا عَلَى اللَّـهِ الْكَذِبَ ۚ إِنَّ الَّذِينَ يَفْتَرُونَ عَلَى اللَّـهِ الْكَذِبَ لَا يُفْلِحُونَ ﴿١١٦﴾۔۔۔سورة النحل
ترجمه: کسی چیز کو اپنی زبان سے جھوٹ موٹ نہ کہہ دیا کرو کہ یہ حلال ہے اور یہ حرام ہے کہ اللہ پر جھوٹ بہتان باندھ لو، سمجھ لو کہ اللہ تعالیٰ پر بہتان بازی کرنے والے کامیابی سے محروم ہی رہتے ہیں

آپ کے پاس کیا دلیل ہے کہ جو لوگ قرآنی تعویذ کو شرک قرار دیتے ہیں وہ حرام کام کے مرتکب ہیں؟ بھائی میرے یہ حلال اور حرام کا اختیار آپ کے ہاتھ میں نہیں ہے، پہلے آپ ان لوگوں سے جو قرآنی تعویذ اور ہر قسم کے تعویذ کو شرک قرار دے رہے ہیں ان سے ان کا پورا موقف پوچھیں کہ آخر وہ کیا دلائل دیتے ہیں؟ ان کا نظریہ کیا ہے؟

میرے خیال میں تو قرآن تعویذ بنانے کے لئے نہیں اترا، قرآن اللہ کی آخری کتاب ہے جس کو پڑھنے والا اورجس پر عمل کرنے والے کی دنیا و آخرت سنور جاتی ہے ناکہ اس کا تعویذ بنا کر گلے میں ڈالا جائے۔

اب جس کا دل چاہے وہ تعویذ دیتا پھرے، جواز کے فتاویٰ جات تو ان کو مل جاتے ہیں، جب ایک عمل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے دور میں تھا ہی نہیں تو اس پر عمل کیوں، جب کہ آپ خود اس کو منع کر رہے ہیں، تو منع اس سے کیا جاتا ہے جو چیز نقصان دہ ہو، تو لہذا ان تعویذات سے لوگوں کو ہٹا کر عقیدہ توحید اور اللہ پر کامل بھروسے کی دعوت دیں۔

اللہ تعالیٰ سمجھنے کی توفیق عطا فرمائے آمین
 

حافظ عمران الہی

سینئر رکن
شمولیت
اکتوبر 09، 2013
پیغامات
2,101
ری ایکشن اسکور
1,451
پوائنٹ
344
وَلَا تَقُولُوا لِمَا تَصِفُ أَلْسِنَتُكُمُ الْكَذِبَ هَـٰذَا حَلَالٌ وَهَـٰذَا حَرَامٌ لِّتَفْتَرُوا عَلَى اللَّـهِ الْكَذِبَ ۚ إِنَّ الَّذِينَ يَفْتَرُونَ عَلَى اللَّـهِ الْكَذِبَ لَا يُفْلِحُونَ ﴿١١٦﴾۔۔۔سورة النحل
ترجمه: کسی چیز کو اپنی زبان سے جھوٹ موٹ نہ کہہ دیا کرو کہ یہ حلال ہے اور یہ حرام ہے کہ اللہ پر جھوٹ بہتان باندھ لو، سمجھ لو کہ اللہ تعالیٰ پر بہتان بازی کرنے والے کامیابی سے محروم ہی رہتے ہیں

آپ کے پاس کیا دلیل ہے کہ جو لوگ قرآنی تعویذ کو شرک قرار دیتے ہیں وہ حرام کام کے مرتکب ہیں؟ بھائی میرے یہ حلال اور حرام کا اختیار آپ کے ہاتھ میں نہیں ہے، پہلے آپ ان لوگوں سے جو قرآنی تعویذ اور ہر قسم کے تعویذ کو شرک قرار دے رہے ہیں ان سے ان کا پورا موقف پوچھیں کہ آخر وہ کیا دلائل دیتے ہیں؟ ان کا نظریہ کیا ہے؟

میرے خیال میں تو قرآن تعویذ بنانے کے لئے نہیں اترا، قرآن اللہ کی آخری کتاب ہے جس کو پڑھنے والا اورجس پر عمل کرنے والے کی دنیا و آخرت سنور جاتی ہے ناکہ اس کا تعویذ بنا کر گلے میں ڈالا جائے۔

اب جس کا دل چاہے وہ تعویذ دیتا پھرے، جواز کے فتاویٰ جات تو ان کو مل جاتے ہیں، جب ایک عمل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے دور میں تھا ہی نہیں تو اس پر عمل کیوں، جب کہ آپ خود اس کو منع کر رہے ہیں، تو منع اس سے کیا جاتا ہے جو چیز نقصان دہ ہو، تو لہذا ان تعویذات سے لوگوں کو ہٹا کر عقیدہ توحید اور اللہ پر کامل بھروسے کی دعوت دیں۔

اللہ تعالیٰ سمجھنے کی توفیق عطا فرمائے آمین
محترم بھائی اسکا مطلب ہے کہ آپ بھی قرآنی تعویذ کو شرک سمجھتے ہیں؟ اور جہاں تک کسی چیز کی ممانعت کا تعلق ہے کیا ہر ممنوع کام کے ارتکاب سے شرک لازم آ جاتا ہے، جو لوگ اس بات کا دعوی کرتے ہیں کہ قرآنی تعویذ شرک ہے تو دلیل بھی مدعی کے ذمے ہے البینۃ علی المدعی
اور جہاں تک میرے کسی کا م کو حرام کہنے کا تعلق ہے تو یہ ظاہر سی بات ہے کہ کسی سلفی پر بغیر کسی شرکیہ کا م کے شرک کا فتوی لگانا حرام نہیں تو اور کیا ہے؟
 

حافظ عمران الہی

سینئر رکن
شمولیت
اکتوبر 09، 2013
پیغامات
2,101
ری ایکشن اسکور
1,451
پوائنٹ
344


میرے خیال میں تو قرآن تعویذ بنانے کے لئے نہیں اترا، قرآن اللہ کی آخری کتاب ہے جس کو پڑھنے والا اورجس پر عمل کرنے والے کی دنیا و آخرت سنور جاتی ہے ناکہ اس کا تعویذ بنا کر گلے میں ڈالا جائے۔

اب جس کا دل چاہے وہ تعویذ دیتا پھرے، جواز کے فتاویٰ جات تو ان کو مل جاتے ہیں، جب ایک عمل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے دور میں تھا ہی نہیں تو اس پر عمل کیوں،آمین

میں نے اب تک یہ نہیں کہا ہے کہ قرآنی تعویذ جائز ہے، میں بھی یہی کہتا ہوں کہ یہ تعویذ ممنوع ہے اور نہ ہی قرآن تعویذ کے لیے نازل ہوا ہے ، میرا موقف یہ ہے کہ قرآنی تعویذ کے جواز کا فتوی دینے سے اور اسے پہننے سے ایک سلفی مشرک نہیں بن جاتا ،زیادہ سے زیادہ یہ کہہ سکتے ہیں کہ اس نے ممنوع کام کا ارتکاب کیا ہے جو ناجائز ہے نہ کہ شرک!!
 

محمد ارسلان

خاص رکن
شمولیت
مارچ 09، 2011
پیغامات
17,865
ری ایکشن اسکور
41,090
پوائنٹ
1,155
محترم بھائی اسکا مطلب ہے کہ آپ بھی قرآنی تعویذ کو شرک سمجھتے ہیں؟ اور جہاں تک کسی چیز کی ممانعت کا تعلق ہے کیا ہر ممنوع کام کے ارتکاب سے شرک لازم آ جاتا ہے، جو لوگ اس بات کا دعوی کرتے ہیں کہ قرآنی تعویذ شرک ہے تو دلیل بھی مدعی کے ذمے ہے البینۃ علی المدعی
اور جہاں تک میرے کسی کا م کو حرام کہنے کا تعلق ہے تو یہ ظاہر سی بات ہے کہ کسی سلفی پر بغیر کسی شرکیہ کا م کے شرک کا فتوی لگانا حرام نہیں تو اور کیا ہے؟
بھائی اس مسئلے پر تحقیق کرنی چاہئے، میں نے کسی سلفی عالم کو بغیر شرکیہ امور کا مرتکب ہوئے مشرک نہیں کہا۔
 

محمد ارسلان

خاص رکن
شمولیت
مارچ 09، 2011
پیغامات
17,865
ری ایکشن اسکور
41,090
پوائنٹ
1,155
میں نے اب تک یہ نہیں کہا ہے کہ قرآنی تعویذ جائز ہے، میں بھی یہی کہتا ہوں کہ یہ تعویذ ممنوع ہے اور نہ ہی قرآن تعویذ کے لیے نازل ہوا ہے ، میرا موقف یہ ہے کہ قرآنی تعویذ کے جواز کا فتوی دینے سے اور اسے پہننے سے ایک سلفی مشرک نہیں بن جاتا ،زیادہ سے زیادہ یہ کہہ سکتے ہیں کہ اس نے ممنوع کام کا ارتکاب کیا ہے جو ناجائز ہے نہ کہ شرک!!
بھائی زیادہ سے زیادہ کوشش کرنی چاہئے کہ لوگوں کو قرآن پڑھنے اور سمجھنے کی طرف راغب کرنے کی۔
 

حافظ عمران الہی

سینئر رکن
شمولیت
اکتوبر 09، 2013
پیغامات
2,101
ری ایکشن اسکور
1,451
پوائنٹ
344
بھائی زیادہ سے زیادہ کوشش کرنی چاہئے کہ لوگوں کو قرآن پڑھنے اور سمجھنے کی طرف راغب کرنے کی۔
یہ تو ٹھیک ہے ہماری یہی کوشش ہے کہ لوگ قرآن کو سمجھیں اور اس کی طرف رغبت بھی کریں لیکن بات یہ ہے کہ کیا کوئی توحید پرست بھائی قرآنی تعویز کی وجہ سے مشرک کیسے قرار پاتا ہے، ہمارے ان بھائیوں کو اللہ سے ڈر جانا چاہیے جو بغیر غور وفکر کے یہ موقف رکھتے ہیں کہ قرآنی تعویذ شرک ہے
 
Top