• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کرامات اولیاء اور احوالِ شیطانی میں فرق

شمولیت
ستمبر 21، 2015
پیغامات
2,619
ری ایکشن اسکور
738
پوائنٹ
290
1۔ شیطان کا انسان پر غلبہ اسی وقت ہوتا ہے ، جب ان کا ایمان کمزور ہو ، جب ایمان پختہ ہو تو شیطان کی پکڑ ڈھیلی ہوجاتی ہے ۔ جیساکہ اللہ نے قرآن مجید کے اندر فرمایا ہے : شیطان ایمان والوں پر قابو نہیں پاسکتا۔
2۔ شیطان انسان کو گمراہ کرنے سے پہلے اندازہ لگاتا ہے ، کہ ان دونوں کے درمیان کتنی دوری ہے ، اگر نیک و صالح شخص ہو تو اسے مکروہ چیزوں میں مبتلا کرتا ہے ، اگر وہ پہلے ہی ایسا ہو تو اسے ایک قدم آگے صغیرہ گناہوں میں ڈال دیتا ہے اور اسی طرح کبیرہ تک لے آتا ہے ۔ قرآن مجید میں اس طرف لفظ خطوات ( قدم بہ قدم ) بول کر اشارہ کیا گیا ہے ۔
3۔ شیطان آدمی کو ایک دم برائیوں کی طرف نہیں لے کے آتا ، تاکہ کہیں آدمی یک دم گناہوں کی گندگی سے متنفر نہ ہو جائے ، بلکہ اس اندھیر نگری سے آہستہ آہستہ مانوس کرتا ہے ۔
اور اللہ نے اسی لئے انتباہ کرتے هوئے فرمایا " لا تتبعوا خطوات الشيطان"
 
Top