• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

عورت کا اعتکاف گھر میں یا مسجد میں ؟؟؟

عبدالرحمن بھٹی

مشہور رکن
شمولیت
ستمبر 13، 2015
پیغامات
2,435
ری ایکشن اسکور
287
پوائنٹ
165
عورت کا گھر میں اعتکاف کرنا غیر مشروع ہے اور مسجد میں اعتکاف کتاب و سنت کے عین مطابق ہے ۔قرآن پاک میں اللہ نے اعتکاف کو مسا جد سے معلق کیا ہے
وَأَنْتُمْ عَاكِفُونَ فِي الْمَسَاجِدِ البقرہ 187
اور ازواج مطهرات كا اعتكاف بھی مسجد میں ہوتا تھا ۔
جن پر قرآن اترا انہوں نے خواتین کو اس ترغیب نہ دی نلکہ جن ازواج نے مسجد میں خیمے لگائے ان کے خیمے اکھڑوا دیئے۔ صحابیات میں سے بھی کسی نے دور خلافت میں کبھی مسجد میں اعتکاف نہیں کیا۔
قرآنِ پاک کی کسی آیت کی تفسیر رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے فرامین کی روشنی میں ہی جائز ہے۔ اپنے طور پر تفسیر کرنے والوں کے لئے رسو اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی طرف سے وعید ہے۔
 

عبدالقیوم

مشہور رکن
شمولیت
اگست 25، 2013
پیغامات
825
ری ایکشن اسکور
431
پوائنٹ
142
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمان ہے کہ”مَنْ يُرِدْ اللَّهُ بِهِ خَيْرًا يُفَقِّهْهُ فِي الدِّينِ“۔
سوچنے کی بات یہ ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات میں ازواج مطہرات کے علاوہ کسی صحابیہ نے اعتکاف نہیں کیا اور نہ ہی خلفاء راشدین کے دور کی کوئی مثال ملتی ہے۔
لہٰذا خواتین کے لئے یا تو اعتکاف مشروع ہی نہیں اگر ہے تو وہ اپنے گھروں میں ہی اعتکاف کریں۔ فرض نماز خواتین کے لئے گھر میں پڑھنا مشروع ہے تو ایک سنت بدرجہ اولیٰ گھر میں مشروع ہوگی۔
ھففف
 

ابن داود

فعال رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
نومبر 08، 2011
پیغامات
3,376
ری ایکشن اسکور
2,689
پوائنٹ
556
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
عورت کا اعتکاف مشروع نھیں اگرہے تو گھر میں ہی اعتکاف کریں کتاب و سنت سے اسکی دلیل بتادیں ۔
اٹکل کی دلیل سے کام نہیں چلے گا!!
اہل الرائے پر یہ ظلم نہ کریں بھائی! آپ نے تو ان کے ہاتھ پیر باندھ دیئے!
 
شمولیت
جولائی 20، 2016
پیغامات
116
ری ایکشن اسکور
28
پوائنٹ
56
اٹکل کی دلیل سے کام نہیں چلے گا!!
اہل الرائے پر یہ ظلم نہ کریں بھائی! آپ نے تو ان کے ہاتھ پیر باندھ دیئے!
بھائ آپ دلیل دیں ۔کس دلیل کی بنا پر آپ کہہ رہے ہیں کہ عورت گھر میں اعتکاف کرے؟
 
شمولیت
جولائی 20، 2016
پیغامات
116
ری ایکشن اسکور
28
پوائنٹ
56
جب قرآن وسنت سے واضح دلیل مل گئ ہے تو اسے چھو ڑ کر دوسری طرف جانے کی ضرورت کیا ہے؟
 

عمر اثری

سینئر رکن
شمولیت
اکتوبر 29، 2015
پیغامات
4,408
ری ایکشن اسکور
1,103
پوائنٹ
412
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!

اٹکل کی دلیل سے کام نہیں چلے گا!!
اہل الرائے پر یہ ظلم نہ کریں بھائی! آپ نے تو ان کے ہاتھ پیر باندھ دیئے!
بھائ آپ دلیل دیں ۔کس دلیل کی بنا پر آپ کہہ رہے ہیں کہ عورت گھر میں اعتکاف کرے؟
لگتا ہے غلط فہمی ہو گئ ہے
 

ابن داود

فعال رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
نومبر 08، 2011
پیغامات
3,376
ری ایکشن اسکور
2,689
پوائنٹ
556
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
بھائ آپ دلیل دیں ۔کس دلیل کی بنا پر آپ کہہ رہے ہیں کہ عورت گھر میں اعتکاف کرے؟
شُب شُب بولیں بھائی! میرا تعلق اہل الرائے سے نہیں! نیچے میرے دستخط کو ملاحظہ فرمائیں!
 
شمولیت
جولائی 20، 2016
پیغامات
116
ری ایکشن اسکور
28
پوائنٹ
56
جن پر قرآن اترا انہوں نے خواتین کو اس ترغیب نہ دی نلکہ جن ازواج نے مسجد میں خیمے لگائے ان کے خیمے اکھڑوا دیئے۔
ازواج مطہرات کےخیمےدیکھا دیکھی لگائے گئے تھے اس لئے آپ ﷺنے اکھڑوادیے .اگر گھر میں اعتکاف جائز ہوتا تو آپﷺانکو گھر میں اعتکاف کرنے کا حکم دیتے لیکن ایسا نہیں ہے .آپﷺنے خود اپنا اعتکاف چھوڑ دیا تھا اور شوال میں اس اعتکاف کی قضا دی .[بخاری الاعتکاف 2034]
اسی طرح آپﷺ کی ایک زوجہ محترمہ کو استحاضہ کا عارضہ تھا وہ آپ کے ہمراہ مسجد میں اعتکاف کرتی تھیں.[بخاری :الحیض 3]
اگر گھر میں اعتکاف جائز ہوتا تو آپﷺانکو گھر میں اعتکاف کرنے کا حکم دیتے لیکن ایسا نہیں ہے.
نبی ﷺ کی وفات کے بعد ازواج مطہرات کے اعتکاف کو آپ کیا کہیں گے ؟نبی ﷺ کے منع کرنے کے بعد انہوں نے مسجد میں اعتکاف کیوں کیا؟ کیا انہوں نے جان بوجھ کر نبیﷺکی مخالفت کی؟
 

عبدالرحمن بھٹی

مشہور رکن
شمولیت
ستمبر 13، 2015
پیغامات
2,435
ری ایکشن اسکور
287
پوائنٹ
165
نبی ﷺ کی وفات کے بعد ازواج مطہرات کے اعتکاف کو آپ کیا کہیں گے ؟نبی ﷺ کے منع کرنے کے بعد انہوں نے مسجد میں اعتکاف کیوں کیا؟ کیا انہوں نے جان بوجھ کر نبیﷺکی مخالفت کی؟
حوالہ بمع عربی متن فراہم کردیں شکریہ
 
Top