1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

وحدت رویت اور اختلاف مطالع

'رویت ہلال' میں موضوعات آغاز کردہ از کیلانی, ‏جولائی 21، 2013۔

  1. ‏اگست 23، 2013 #41
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    آپ کے منہ مبارک سے یہ باتیں اچھی نہیں لگتیں جو ابتدا خود ہی کر رہے ہیں اور جواب ملنے پر مجھ پر تنقید کا الزام لگا رہے ہیں، اسی لئے آپ کو لکھا تھا کہ اپنا تعارف کروا دیں۔

    میرے 900 کے قریب تھریڈز و مراسلات ہونے والے ہیں جن پر میں نے شائد 2 مرتبہ سوال پوچھا ہوا ھے اور جواب ملنے پر جزاک اللہ، آگے کی کوئی بحث نہیں اور نہ ہی میں نے ایسی کسوٹی استعمال کیا ھے کہ میرے ان چند سوالوں میں آپ کی رائے کس پر ھے جواب دیں پھر آگے بات ہو گی وغیرہ اگر جاننا ھے تو فارم کے کسی بھی سینئر ممبر سے پوچھ سکتے ہیں، اور آپ تو صحیح معنوں میں میاں مٹھو ہی لگ رہے ہیں جو 3 سوالات کے علاوہ کچھ بول ہی نہیں رہے۔

    کیا ساری دنیا کے مسلمانوں کی عید ایک ھی دن ھونی چاھیے؟ ​

    جو لوگ یہ بات کہتے ھیں کہ " ساری دنیا کے مسلمانوں کی عید ایک دن ھونی چاھیے وہ تو بالکل ھی لغو بات کہتے ھیں ، کیونکہ تمام دنیا میں رویتِ ھلال کا لازمًا اور ھمیشہ ایک ھی دن ھونا ممکن نہیں ھے۔۔۔

    رھا کسی ملک یا کسی ملک کے ایک بڑے علاقے میں سب مسلمانوں کی ایک عید ھونے کا مسئلہ تو شریعت نے اس کو بھی لازم نہیں کیا ھے ۔۔۔۔۔۔۔

    اگر یہ ھو سکے اور کسی ملک میں شرعی قواعد کے مطابق رویت کی شہادت اور اس کے اعلان کا انتظام کر دیا جائے تو اس کو اختیار کرنے میں کوئی مضائقہ بھی نہیں ھے ، مگر شریعت کا یہ مطالبہ ھر گز نہیں ھے کہ ضرور ایسا ھی ھونا چاھیے ، اور نہ شریعت کی نگاہ میں یہ کوئی بُرائی ھے کہ مختلف علاقوں کی عید مختلف دنوں میں ھو۔۔۔۔۔۔

    اللہ کا دین تمام انسانوں کے لیے ھے اور ھر زمانے کے لیے ھے۔۔۔۔

    آج لوگ ریڈیو ( یا ٹیلی ویژن ) کی موجودگی کی بنا پر یہ باتیں کر رھے ھیں کہ سب کی ایک عید ھونی چاھیے ، مگر آج سے 60-70 برس پہلے تک پورے برّ صغیر ھند تو درکنار ' اس کے کسی ایک صوبے میں بھی یہ ممکن نہ تھا کہ 29 رمضان کو عید کا چاند دیکھ لیے جانے کی اطلاع سب مسلمانوں تک پہنچ جاتی۔۔۔۔۔۔۔۔

    اگر شریعت نے عید کی وحدت کو لازم کر دیا ھوتا تو پچھلی صدیوں میں مسلمان اس حکم پر آخر کیسے عمل کر سکتے تھے ؟

    ( سیّد ابوالاعلیٰ مودودی رح، کتاب الصّوم )
    نقل
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  2. ‏اگست 23، 2013 #42
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    براہ مہربارنی اسلامی حکومتیں اور موجودہ دور کے مسلمان ممالک پر تھوڑی روشنی ڈالیں کہ آپ اسلامی حکومت کس کو کہتے ہیں؟ پھر ان کا کیا ہو گا جو مسلمان دنیا کے ہر کونے کونے میں موجود ہیں چاہے وہ غیر اسلامی ملک ہو یا کیمیونٹس، ان ممالک میں مسلمان روزے بھی رکھتے ہیں اعتکاف پر بھی بیٹھتے ہیں اور عید بھی کرتے ہیں۔

    محترم ایک جگہ پر آپ شیخ کے موقف پر دفاع میں سمجھا رہے ہیں کہ اسلامی حکومت اور مسلم حکومت اور دوسری جگہ آپ عالمی سطح پر سوال اٹھا رہے ہیں، عالمی سطح پر ایسا ہونے پر آپ کیسے توقع کرتے ہیں کیونکہ عالمی سطح اگر لکھیں گے تو اس میں غیر اسلامی ممالک بھی آتے ہیں اور کسی بھی چیز کو نافذ کرنا حکومت کا کام ہوتا ھے کیا آپ غیر اسلامی ممالک سے یہ توقع کرتے ہیں کہ وہ مسلمانوں کے لئے اسے نافذالعمل کر سکتے ہیں۔

    Canada (Yukon, Northwest Territories, and Nunavut), United States of America (Alaska), Denmark (Greenland), Norway, Sweden, Finland, Russia, and extremities of Iceland. A quarter of Finland's territory lies north of the Arctic Circle and at the country's northernmost point the sun does not set for 73 days during summer. In Svalbard, Norway, the northernmost inhabited region of Europe, there is no sunset from approximately 19 April to 23 August.

    محترم لاہوری عالمی سطح پر ان ممالک کے بارے میں آپکا کیا خیال ھے یہاں مسلمان بھی بستے ہیں جو روزے بھی رکھتے ہیں اور عید بھی کرتے ہیں۔ امید ھے اب آپ بات آگے بڑھائیں گے۔

    والسلام
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  3. ‏اگست 24، 2013 #43
    محمد وقاص گل

    محمد وقاص گل سینئر رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 23، 2013
    پیغامات:
    1,037
    موصول شکریہ جات:
    1,678
    تمغے کے پوائنٹ:
    310

    4 سوال 4 سوال۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    عجیب سا معاملہ لگ رہا ہے۔ یہ تو ضد ہوئی لاہوری بھائی۔
    ایک عقل وشعور والا انسان یہ نہیں دیکھتا کہ اسے کیا اور کون جواب دیتا ہے؟؟
    بلکہ وہ تو چاہتا ہے کہ میرے سامنے کوئی ایسی بات آئے جس سے مسئلہ واضح ہو جائے اور بات طول نہ پکڑے ۔۔ اور آپ کے سامنے کئی باتیں ایسی آئیں بھی لیکن 4 سوال 4 سوال۔۔۔۔۔۔ اس نے آپ کو سوچنے اور سمجھنے کی طرف توجہ ہی نا کرنے دی۔
    خیر۔۔۔۔
    آپ نے کہا میں نے وہ تحریر پڑھی دیکھی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    محترم جو موقف آپ نے اس کو پڑھنے کے بعد لکھا میں تو اس کو دیکھنے سے قاصر۔۔ رہنمائی کر کے شکریہ کا موقع دیں۔
     
  4. ‏اگست 24، 2013 #44
    محمد وقاص گل

    محمد وقاص گل سینئر رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 23، 2013
    پیغامات:
    1,037
    موصول شکریہ جات:
    1,678
    تمغے کے پوائنٹ:
    310

    سوالات تو اس تحریر کے بعد ہیں نا۔۔۔
    محترم کنعان بھائی نے جو آپ سے وضاحت چاہی وہ آپ کی اس تحریر سے متعلق ہے اس لئے پہلے عنوان "عالمی سطح پر ان کے موقف کو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا جائے" کے اشکلات دور ہونگے تو تب آگے کی بات ہو گی محترم۔۔۔۔
     
  5. ‏اگست 25، 2013 #45
    عبدالرحمن لاہوری

    عبدالرحمن لاہوری رکن
    جگہ:
    لاهور
    شمولیت:
    ‏جولائی 06، 2011
    پیغامات:
    126
    موصول شکریہ جات:
    456
    تمغے کے پوائنٹ:
    81

    افسوس کی بات ہے کہ جس موقف کی تبلیغ آپ فرما رہے ہیں اس کی حقیقت کا علم آپ کو خود نہیں ہے۔
    جس تحریر کا لنک آپ نے پیسٹ کیا تھا اسی میں یہ موقف بیان ہوا ہے جناب، ذرا غور سے پڑھئے:

    "8۔ ہمارے نزدیک علامہ شوکانی رحمہ اللہ اور شیخ الاسلام کا نظریہ صحیح معلوم ہوتا ہے کہ ایک اہل بلد کی روٴیت دوسرے بلد کے لئے معتبر ہے۔ اوران پر روزہ لازم ہوجاتاہے جب کہ ہر دو بلاد کا مطلع ایک ہو یا اتنا فرق ہو کہ اگر ایک بلد میں چاند طلوع ہوا ہے تو دوسرے بلد میں بھی اس کا طلوع ممکن ہو۔
    اگر ہر دو بلد کے مطالع میں اتنا فرق ہے کہ جب دونوں میں سے ایک بلد میں چاند طلوع ہو اور دوسرے میں طلوع نہ ہو بلکہ اس فرق سے تاریخ بدل جائے تو ایسے ہر دو بلاد میں سے ایک بلد میں دیکھا ہوا چاند دوسرے بلد کے لئے قطعاً کافی نہیں ہوگا۔ روزہ اور عید ادا کرنے میں وہ ایک دوسرے کے پابند نہیں ہوں گے۔ مغنی ابن قدامہ سے بھی ہمارے اس موقف کی تائید ہوتی ہے۔"

    حیرت ہے کہ جس تحریر کو پیش کر کے آپ میرے اشکالات دور کرنے کی کوشیش کر رہے ہیں آپ کو خود اس کی حقیقت کا علم نہیں معلوم ہوتا ہے کہ آپ نے اس کا بغور مطالعہ نہیں فرمایا۔ اسی لئے میں بار بار اس بات پر زور دے رہا ہوں کہ خدارا قائلین اعتبار اختلاف مطالع پہلے اختلاف کی ۴ صورتوں میں سے کسی ایک صورت پر تو جمع ہو جائیں۔۔۔کوئی کہتا ہے کہ مسافت قصر کا اعتبار ہوگا، کوئی کہتا ہے کہ مطلع متفق ہوگا تو رویت کا اعتبار ہو گا ورنہ نہیں، کوئی کہتا ہے کہ کسی چیز کا بھی اعتبار نہیں ہوگا بلکہ ہر شہر کی اپنی رویت ہوگی خواہ کتنے ہی قریب کیوں نہ ہوں، کوئی کہتا ہے کہ ہر ملک کی اپنی رویت ہوگی اور کوئی کہتا ہے کہ جو ملک کی رویت ہلال کمیٹی فیصلہ کردے وہی قابل عمل ہوگا۔۔۔ اب آپ ہی بتایئے ان میں کونسی بات درست ہے؟؟؟ صاحب تحریر نے جس موقف کو درست قرار دیا ہے وہ میں نے بیان کردیا ہے مگر مطلع والی بات کو صاحب تحریر نے امام شوکانی کی طرف غلط منسوب کیا ہے کیونکہ امام صاحب کا موقف تو "وحدت رویت" والا ہے:

    [​IMG]
    [​IMG]
    اگر آپ اتفاق مطلع والی صورت کے قائل ہیں تو ہمیں آگاہ کیجئے تاکہ گفتگو مثبت انداز میں آگے بڑھ سکے۔۔۔شکریہ​
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • پسند پسند x 2
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  6. ‏اگست 25، 2013 #46
    عبدالرحمن لاہوری

    عبدالرحمن لاہوری رکن
    جگہ:
    لاهور
    شمولیت:
    ‏جولائی 06، 2011
    پیغامات:
    126
    موصول شکریہ جات:
    456
    تمغے کے پوائنٹ:
    81

    [​IMG]
    ترجمہ: جب دیکھ لیں اْس (چاند) کو ایک علاقے والے تو تمام علاقوں پر اْس (رویت) کی موافقت لازم ہے​
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  7. ‏اگست 25، 2013 #47
    محمد وقاص گل

    محمد وقاص گل سینئر رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 23، 2013
    پیغامات:
    1,037
    موصول شکریہ جات:
    1,678
    تمغے کے پوائنٹ:
    310



    صرف اپنی بات آپ کو نظر آ گئی جس سے اپنا مقصد پورا ہوتا تھا اگلی بات آپ کو نظر نہ آئی عجیب بات ہے۔۔ اس سے تو معلوم ہو رہا ہے آپ مسئلے کو سمجھنا ہی نہیں چاہتے۔۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  8. ‏اگست 25، 2013 #48
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    اپنے ہی سوالوں کی تمہید پر فرار، ایک ممبر کی پولائٹ درخواست پر سارا غصہ ذاتیات سے نکالنے کی ناکام کوشش۔ آ جا کر کسی کے رائے کا سہارا لینا پڑا جس سے چنا اور گندم کا بھاؤ بھی بتا دیا۔ ابتسامہ

    والسلام
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  9. ‏اگست 25، 2013 #49
    محمد وقاص گل

    محمد وقاص گل سینئر رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 23، 2013
    پیغامات:
    1,037
    موصول شکریہ جات:
    1,678
    تمغے کے پوائنٹ:
    310

    میں ایک ادنیٰ طالب علم ہوں شائد آپ کو میرا سمجھانے کا انداز مشکل لگ رہا ہو تو یہ محترم کیلانی رحمہ اللہ کی کتاب اسلام کا نظام فلکیات سے کچھ اقتباسات ملاحظہ ہوں۔۔

    [​IMG]
     
  10. ‏اگست 25، 2013 #50
    محمد وقاص گل

    محمد وقاص گل سینئر رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 23، 2013
    پیغامات:
    1,037
    موصول شکریہ جات:
    1,678
    تمغے کے پوائنٹ:
    310

    [​IMG]
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں